Health Is a Wealth

What should be done to save children from psychiatrists

What should be done to save children from psychiatrists

What should be done to save children from psychiatrists

دماغ کا عمل دخل شعوری اعمال سے کہیں زیادہ ہے۔ کچھ لوگوں کو شاید یہ سن کر حیرانی ہو کہ دل کی دھڑکن سے لے کر سوتے ہوئے نظام انہضام اور نیند سب کسی نہ کسی حد تک دماغ کے دائرہ کار میں آتے ہیں۔ دماغ کے خاص خلیے باہمی پیغام رسانی کے لیے کچھ خاص کیمیائی اجزا کا استعمال کرتا ہے جنہیں سائنسی زبان میں نیروٹرانسمٹرز کہتے ہیں۔

انسان کے اندر کیا کیسا محسوس کیا جارہا ہے، یہ سب نیروٹرانسمٹرز فیصلہ کرتے ہیں۔ نفسیاتی امراض کی بڑی وجہ ان نیروٹرانسمٹرز کی کمی بیشی ہوتی ہے۔ بچوں کو نفسیاتی امراض نہیں ہوتیں، یہ ایک عام غلط فہمی ہے۔ بچے نفسیاتی امراض کا شکار جلدی ہوجاتے ہیں کیونکہ وہ نازک طبیعت کے مالک ہوتے ہیں۔
پاکستان کے نفسیاتی امراض میں مبتلا افراد کے صحیح اعدادوشمار تو شاید نہیں معلوم تاہم ایک سروے کے مطابق تقریباً 16 فیصد پاکستانی مختلف نفسیاتی امراض کا شکار ہیں جن میں خواتین اور خصوصاً 12 سے 18 سال کی عمر کی بچیوں کی کثیر تعداد ہے۔

نفسیاتی امراض میں مبتلا بچے عموماً تب تک ہسپتال نہیں لائے جاتے جب تک ان کی حالت زیادہ خراب نہ ہوجائے۔ بدقسمتی سے پاکستان میں ان امراض کی تشخیص اور علاج کے لیے مناسب مقدار میں خصوصی میڈیکل سنٹرز بہت ہی کم ہیں جس کی وجہ سے بہت سے بچے اور بڑے تشخیص اور علاج کی سہولیات سے محروم رہ جاتے ہیں۔
عالمی ادارہ صحت کی ایک رپورٹ کے مطابق پاکستان میں صحت کے پہلے سے معمولی حجم والے بجٹ کا صرف 0.4 فیصد حصہ دماغی، ذہنی اور نفسیاتی امراض کے علاج کے لیے مختص کیا جاتا ہے۔بچوں میں نفسیاتی امراض کی ایک اہم وجہ گھر کا اندرونی ماحول اور والدین کا آپس میں اور بچوں کے ساتھ برتاؤ ہے۔ دوسری اہم جگہ بچے کے سکول کا ماحول ہے۔ والدین کے معاشی حالات، بچوں کے ساتھ گالم گلوچ، مارپیٹ وغیرہ بچوں کی نفسیاتی صحت کو بری طرح متاثر کرتے ہیں۔ ایک بین الاقوامی سروے کے مطابق نفسیاتی امراض میں مبتلا بچوں میں 32 فیصد کا تعلق گھر کے اندرونی ماحول کے ساتھ ہوتا ہے۔
بچوں میں نفسیاتی امراض کی علامات بہت مختلف طریقوں سے ظاہر ہو سکتی ہیں۔ مندرجہ ذیل علامات کی صورت میں فوراً ڈاکٹر سے رجوع کریں۔ بچے کا خواہ مخواہ چڑچڑا ہونا، نافرمانی کرنا، طبیعت میں تیزی آ جانا یا بالکل خاموش ہو جانا۔ کلاس میں اور گھر پر کوئی دوست نہ بنانا، کسی بھی کام پر توجہ مرکوز نہ کر سکنا، لڑاکا رجحانات وغیرہ وغیرہ۔
بعض بچوں کا وزن بہت کم یا زیادہ ہو جاتا ہے
نفسیاتی امراض کے بچے اپنے قد کے مقابلے میں ذہنی نشوونما میں اپنی عمر کے بچوں سے بہت پیچھے رہ جاتے ہیں۔ بدقسمتی سے ہمارے معاشرے میں نفسیاتی امراض کو ایک’’ سماجی داغ‘‘ سمجھا جاتا ہے حالانکہ یہ بالکل غلط بات ہے۔ کسی بھی بیماری کی طرح یہ بھی ایک بیماری ہے اور اس کا علاج ممکن ہے۔بہت سے لوگ اسے ناقابل علاج سمجھ کر مایوسی کی زندگی بسر کرنے پر مجبور ہو جاتے ہیں۔
اگر کسی بچے میں مندرجہ بالا علامات ہوں تو فوراً بچوں کے قریبی نفسیاتی مرکز میں معا ئنہ کرائیں۔ بچے ملک و قوم کا اثاثہ ہوتے ہیں۔ موجودہ نظام زندگی بچوں کو بہت تنگی اور مشکلات سے دوچار کر رہا ہے۔ لہذا کسی بھی قسم کی غیر معمولی تبدیلی کو فوراً ڈاکٹر سے رجوع کریں۔
حتی الوسع کوشش کریں کہ بچوں کی باتوں کو غور سے سنیں، یہ باتیں اور سوالات شاید بڑوں کے لیے اہمیت کے حامل نہ ہوں لیکن بچے کے لیے بہت اہم ہوتے ہیں۔ اس کی باتوں کو توجہ سے سنیں اور انہیں اہمیت دیں۔ بچے کو یقین دلائیں کہ وہ اہم ہے اور اس کے سوالات پر غور کیا جا تا ہے۔
بچوں پر بے جا سختی سے گریز کریں۔سونے کا نوالہ کھلائیں اور شیر کی آنکھ سے دیکھیں، یہ ضرب المثل ہمارے معاشرے کی عمومی سوچ کی عکاس ہے جو شاید مناسب نہیں ہے۔بچوں کے سکول کے کام میں ان کی مدد کریں اور اس کی مشکلات کو غور سے سنیں۔ بچوں پر سکول میں تشدد بھی بچوں کی ذہنی اور نفسیاتی صحت کو متاثر کرتا ہے۔ بچوں کو نہ نظر آنے والی مافوق الفطرت مخلوق جیسے جنات وغیرہ سے مت ڈرائیں۔ انہیں یقین دلائیں کہ انسان ہی اس کائنات میں اللہ تعالیٰ کی بہترین اور طاقتور مخلوق اور اللہ کا نائب ہے۔
بچوں کے بارے میں کوئی فیصلہ کرتے ہوئے بچوں کی رائے ضرور لیں۔غلطی کرنے پر پیار سے سمجھائیں۔ کچھ بھی سمجھاتے ہوئے یہ بات ضرور ذہن نشین رکھیں کہ بچے کے دماغ اور آپ کی دماغی حیثیت اوراہلیت میں بہت فرق ہے۔
بچوں کا مذاق مت اڑائیں۔ بچے والدین اور اساتذہ سے بہت متاثر ہوتے ہیں لہذا والدین اور اساتذہ کرام پر یہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ اپنے اقوال و افعال کو آئیڈیل بنائیں۔عادات و اطوار کی غیرمعمولی تبدیلی محسوس ہونے پرفوراً بچوں کے معالج اور بچوں کے ماہر نفسیات سے مشورہ کریں۔نفسیاتی مسائل کو کسی بھی دوسری عام بیماری کی طرح بیماری ہی تصور کریں اور علاج کریں۔ جنات کا سایہ ، بھوت، سایہ وغیرہ سب قابلِ علاج بیماریوں کے غلط اور جاہلانہ نام ہیں۔ کسی بھی بیماری کی صورت میں مستند معالج سے رابطہ کریں۔ Ameen!اللہ تعالیٰ سے دعا ہے کہ ہم سب کو ہر طرح کی بیماریوں سے محفوظ رکھے۔

The brain is far more than intelligent behavior. Some people may be surprised to hear that digestive system of digestion and sleep all come to a brain’s scope. The special cells of the brain use some special chemical ingredients to communicate mutually called neurotransmitters.

What is feeling in the human being, all of these decide neurotransmitters. The major reason for psychiatrists is the lack of neurotransmitters. Children do not have psychological disorders, it is a common misconception. Children get psychiatrists early because they are the owners of delicate nature.
The exact figures of people suffering from Pakistan’s psychological illness may not possibly be known, but according to a survey, around 16 percent of Pakistan are suffering from various psychological diseases, among women and especially for the age of 12 to 18 years of age.
Patients with psychiatric disorders are usually not brought to hospitals until their condition is deteriorated. Unfortunately, special medical centers in the appropriate quantity of diagnosis and treatment of these diseases in Pakistan are very few, due to which many children and large diagnosis and treatment facilities are deprived.

According to a World Health Organization report,

only 0.4% of the healthcare minerals budget in Pakistan is appropriated for treating mental, mental and psychological illnesses.
One of the main causes of psychiatric disorders in children is the internal home and the interior of the family, and interact with the children. The second important place is the child’s school environment. Parents’ economic conditions, children’s goggles with children, marpets, etc. affect the psychiatric health of children. According to an international survey, 32 percent of children with psychiatric disorders are associated with the internal environment.

Symptoms of Psychiatrist:

in children can appear in a variety of ways. Refer to the doctor directly in case of the following symptoms. Whether you want a child to be crushed, disobedience, fasting or getting absolutely silent. Do not make friends or friends at home, focus on any work, fight trends etc. What should be done to save children from psychiatrists

Some children weight too much or more
Psychotherapists are very much behind their age in mental development compared to their height. Unfortunately, in our society, psychological diseases are considered as a “social stain”, although it is absolutely wrong. Like any disease it is also a disease and it is possible to treat.
Many people are forced to feel depressed by considering it unbelievable.
If there is any symptom in a child, then contact the child’s nearest psychological center immediately. Children are the assets of the country and nation. The present system of life is suffering from difficulties and difficulties. So refer to any type of extraordinary change immediately. What should be done to save children from psychiatrists

Even try to listen to the thoughts of children, these things and questions may not be important for elders but are important for the child. Listen carefully to it and give them importance. Assure the child that it is important and its questions are considered.
Avoid difficulties on children hardly. Feed your nose and see the lion’s eyes, this paradigm reflects the general thinking of our society that is not appropriate. What should be done to save children from psychiatrists
Help them in the work of children’s school and listen to their problems. Violence at school on children also affects children’s mental and psychological health. Do not be afraid of children not looking at the naturalistic creatures like genres etc. Believe them that man is the best and powerful creature of God in the universe and vice versa of God.
Make sure you take children’s opinion by making decisions about children.
Understand love to make mistakes Understanding anything, be sure to keep in mind that there is a lot of difference in the mind of your child and your mental condition.
Do not make fun of children. Children are very impressed by parents and teachers, so parents and teachers are responsible to make their ideals and ideals idol. Advantages of explicit child care and child psychiatrists feel unusual change Please
Imagine and treat psychiatric problems like any other common illness. Jinnat shadow, ghost, shadow, etc are all types of cure diseases and false and ignorant names. Please contact the physician in case of any illness. Allah Almighty is to protect us from all kinds of diseases.

sourceUrduPoint.com.

Tags

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
error

Enjoy this blog? Please spread the word :)

Follow by Email
Facebook
Facebook
Twitter
Close
Close