Health Articles

What is the Beard

What is the Beard

What is the Beard

It also comes from 14 years to thirty years or even at the age of six ‘or does not leave at all
Despite the name of his name, the intensity of the beard is due to a lot of pleasure. It is also known as the third permanent beard. The majority of the wise bears appear between 14 and 30 years. In some cases, in some cases, the wise person ages 60 years old I also get out.

Or do not go to the table even when it comes to increasing the rigid beard so late, unlike those other 28 teeth that surround themselves in the mouth. That is why the fool is called the beard.
Bearache:
Sometimes the brain seems to have pain in the pyramid or it pipes in it or the material seems to be removed, then it needs to be extracted.
Sometimes the brain grows inside the jawbone, but it is unable to get into the mouth. The doctor of the Faculty of the Dentistry ‘National University of Singapore’ says that it causes a lack of space in the mouth. The beard sometimes starts to rise at such a young age that the beard in front of it prevents it from getting out of the spot or out of the dump.
The beard of such a situation is called Impacted, which is hardly called beard in a jaw.
Bearing the beard:
The exit of the beard is difficult due to problems. Many pain or pain are not uncomfortable, because the new exhausted beer is busy working with the beard of its equivalent. Tissues of the sides during the stroke phase I may have a ‘burnt or may have infections, which may cause a pepper.’
But it is a short period of time and it is counted on dental problems. A specialist doctor advises that “if the water is being reduced by salt water does not decrease in vomiting or irritation. Then the patient should be shown to the doctor. “A dentist can treat skin irritation or/or infection as well.
Should I get out of mind?:
In the past most of the specialists, Dentists (Orthodontists) immediately suggested advice to exaggerate the intelligent beard stuck in the jaw.
At this time, the dentists believe that the intelligent beard cannot get out of the dough or it is not necessary to get out of the trapped bone, nor can it be called wise. Because of this nature, The beard can also be picked up and can be taken to its right position. According to Professor of Department of Dentist Fortnightly and the chairman of the University of New York University, Dr. Stephen J. Mouss, it can be a key role in protecting the mind in reality. Is.
For instance, when a dental equivalent has to be drained or stolen. The Director of Dental Aid Motion and Training of the Singapore General Hospital says, “If a dentist insists on removing your intellect’s beard If you do, then you should not feel any hesitation in taking any ‘third and even fourth dentist advice.’
“However, all these minds should be taken out of the beard that if the blossom is infected, it is impossible to maintain infection, but it is impossible to maintain them. When an implanted acne is associated with the beard, then the reinforcement infection both damaged the beard. Which is called the implanted beard that produces the most and most of the problem? It is those that are in lower jaws and are larger than the jaw bars above.
It is very difficult to pull down the lower imposed beard because it can not be easily removed so that the high-impacted brain is pulled out. Despite this, this work can also be done by a local institute. The need for an oral surgeon may be under the general anesthetic to remove the beard for nervous patients. If the need to lower the lower impressed beard, then the dentist can also advise the upper beard as the upper beard is not removed. Then you will come out more naturally than the surface (prevent it from being a low beard). There will be no availability available) Due to this, there may be problems for lower doses.

Care after taking out the beard:
After taking out the beard, it is important to take care of this dental nerve or does not get any kind of odor that passes close to the beard and tooth roots. If the heat is swollen or vomiting, It gets cured in one day and it is a routine that can be swollen after the beard comes. Suggesting pane clerks (pain relief) can help prevent the pain from being easily cured and any type of infection in the patient Anti-tax courses can be done for prevention.

یہ چودہ برس سے تیس برس یاساٹھ سال کی عمر میں بھی نکل آتی ہے ‘یا پھر بالکل بھی نہیں نکلتی
اپنے نام کے باوجود عقل داڑھ کی آمد مشکل ہی سے خوشی کا سبب ہوتی ہے ۔اسے تیسری مستقل داڑھ بھی کہا جاتا ہے ۔بیشتر عقل داڑھیں 14سے 30سال کی عمر کے درمیان ظاہر ہوتی ہیں ۔البتہ بعض صورتوں میں عقل داڑھ 60سال کی دانشمند انہ عمر میں بھی نکل آتی ہے ۔

یا پھر تابالکل بھی نہیں نکلتی۔چونکہ یہ اضافہ عقبی داڑھ اتنی تاخیر سے اگنا شروع ہوتی ہے برعکس ان 28دیگر دانتوں کے جو کہ منہ میں جگہ گھیرے ہوتے ہیں ‘اسی بنا ء پر ا سے عقل داڑھ کہاجاتا ہے
داڑھ کی تکلیف
بعض اوقات عقل داڑھ میں درد رہنے لگتا ہے یا اس میں پیپ پڑجاتی ہے یا مواد خارج ہونے لگتا ہے تو پھر اسے نکالنے کی ضرورت پیش آجاتی ہے ۔

بعض اوقات عقل داڑھ کی افزائش جبڑے کی ہڈی کے اندر ہوجاتی ہے لیکن وہ منہ میں نکلنے سے قاصر رہتی ہے ۔فیکلٹی آف ڈینٹسٹری ‘نیشنل یونیورسٹی آف سنگاپور کے ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ اس کا ایک سبب منہ میں جگہ کی کمی ہوتا ہے ۔عقل داڑھ بعض اوقات ایک ایسے زوئیے پر اگنا شروع ہوتی ہے کہ اس کے سامنے کی داڑھ اسے نمایاں ہونے یا مسوڑھے سے باہر نکلنے سے روک دیتی ہے ۔ایسی صورت حال کی داڑھ کو Impactedیعنی سختی سے جبڑے کی ہڈی میں جڑی ہوئی داڑھ کہا جاتا ہے ۔
داڑھ کا نکلنا 
عقل داڑھ کا نکلنا مشکل ہی سے مسائل کا سبب بنتا ہے ۔البتہ تھوڑی بہت تکلیف یا درد غیرمعمولی نہیں ہوتا کیونکہ نئی نکلنے والی داڑھ اپنے برابر کی داڑھ سے جگہ بنانے کے لئے مصروف کار ہوتی ہے ۔داڑھ نکلنے کے مرحلے کے دوران اطراف کے ٹشوز میں ورم آسکتا ہے ‘جلن ہو سکتی ہے یا پھر انفیکشن بھی ہو سکتا ہے جس کے نتیجے میں پیپ پڑ سکتی ہے ۔لیکن یہ تکلیف یا اذیت مختصر مدت کی ہوتی ہے اور اسے دانتوں کے مسائل ہی میں شمار کیا جاتا ہے ۔دانتوں کے ایک ماہر ڈاکٹر کا مشورہ ہے کہ ”اگر نمک کے پانی سے غرارے کرنے سے چند دنوں میں ورم یا جلن میں کمی نہیں آتی تو پھر مریض کو چاہئے کہ و ہ ڈاکٹر کو ضرور دکھائے ۔“ایک ڈینٹسٹ ہی ورم جلن یا/ اور انفیکشن کا حسب ضرورت علاج کر سکتا ہے ۔
عقل داڑھ نکلوانی چاہئے یا نہیں 
ماضی میں بیشتر ماہرین دندان (آرتھو ڈونٹسٹس )فوری طور پر جبڑے کی ہڈی میں پھنسی ہوئی عقل داڑھ کو نکلوانے کا مشورہ تجویز کرتے تھے ۔البتہ اس دور میں ڈینٹسٹ اس بات پر یقین رکھتے ہیں کہ جو عقل داڑھ مسوڑھے سے باہر نہ نکل سکی ہو یا جبڑے کی ہڈی میں پھنسی ہوئی ہوا سے نکالنا ضروری نہیں اور نہ ہی اسے دانشمند ی کہا جا سکتا ہے ۔کیونکہ اس نوعیت کی عقل داڑھ کو اٹھایا بھی جاسکتا ہے اور اس کی صحیح پوزیشن میں لا یا جا سکتا ہے ۔نیویارک یونیورسٹی کالج آف ڈینٹسٹری کے ڈپارٹمنٹ آف ڈینٹسٹری فارچلڈرن کے پروفیسر اور چےئرمین ڈاکٹر اسٹیفن جے موس کے مطابق حقیقت میں عقل داڑھ کو محفوظ رکھنا ایک اہم کردار ادا کرسکتا ہے ۔مثال کے طو ر پر جب برابر کا ایک دانت نکالنا پڑجائے جو گل گیا ہو یا اس میں کیڑا لگ چکا ہو ۔سنگاپور جنرل اسپتال کے ڈائریکٹر آف ڈینٹل ایڈ منسٹر یشن اینڈ ٹریننگ کاکہنا ہے ”اگر ایک ڈینٹسٹ آپ کی عقل داڑھ کو نکالنے پر اصرار کرے تو اس کے باوجود بھی آپ کو چاہئے کہ آپ کسی دوسرے ‘تیسرے حتیٰ کہ چوتھے ڈینٹسٹ کا مشورہ لینے میں کسی قسم کی ہچکچاہٹ محسوس نہ کریں ۔“البتہ ان تمام عقل داڑھوں کو نکلوادینا چاہئے کہ اگر گلنے سڑنے ‘انفیکشن یارگڑکی بناء پر ان کو برقراررکھنا نا قابل عمل ہو جائے ۔جب کوئی امپیکٹڈ(Impcated) عقل داڑھ اپنی برابر کی داڑھ سے ربط میں ہوتو پھرامکانی انفیکشن دونوں داڑھوں کو نقصان پہنچا سکتا ہے ۔جو سب سے زیادہ اور انتہائی مسئلہ پیدا کرنے والی امپیکٹڈ داڑھ کہلاتی ہیں ۔یہ وہ ہوتی ہیں جو کہ نچلے جبڑے میں ہوتی ہیں اور اوپر جبڑے کی داڑھوں کے مقابلے میں بڑی ہوتی ہیں ۔نچلی امپیکٹڈ عقل داڑھ کو نکالنا نہایت دشوار ہوتا ہے کیونکہ وہ اتنی آسانی سے نہیں کھینچی جاسکتیں حتیٰ کہ اوپری امپیکٹڈ عقل داڑھ کھینچ لی جاتی ہے ۔ا س کے باوجود بھی یہ کام لوکل انستھیسیا کے تحت ایک ڈینٹسٹ کرسکتا ہے ۔صر ف مشکل داڑھ یا نروس مریضوں کے لئے داڑھ نکالنے کے لئے جنرل انستھیٹک کے تحت اورل سرجن کی ضرورت پیش آسکتی ہے ۔ج نچلی امپیکٹڈ داڑھ نکلوانے کی ضرورت پیش آجائے تو پھر ڈینٹسٹ ساتھ ہی اوپری داڑھ کے نکلوانے کا مشورہ بھی دے سکتا ہے کیونکہ اوپری داڑھ اگر نہ نکالی جائے تو پھر قدرتی سطح سے زیادہ باہر آجائے گی (نچلی داڑھ کے نہ ہونے کی بناء پر اسے رکاوٹ اور سہارا دستیاب نہیں ہو گا )اس کے سبب نچلے مسوڑھے کے لئے مسائل پیدا ہو سکتے ہیں ۔
داڑھ نکلوانے کے بعد کی احتیاط 
داڑھ نکلوانے کے بعد یہ احتیاط کرنا ضروری ہے کہ اس ڈینٹل نرو(رگ )کو کسی قسم کی گزند یا خراش نہ پہنچے جوکہ داڑھ اور دانتوں کی جڑوں کے نہایت نزدیک سے گزرتی ہے ۔اگر مسوڑہ سوج جائے یا کلے میں ورم آجائے تو یہ دو ایک دن میں ٹھیک ہو جاتا ہے اور یہ ایک معمول ہے کہ داڑھ نکلوانے کے بعد ممکن ہے سوجن آجائے ۔پین کلرز (درد رافع)دواؤں کو تجویز کرنے سے درد کو با آسانی محدود رکھا جا سکتا ہے اور مریض کو کسی بھی قسم کے انفیکشن سے بچاؤ کے لئے اینٹی بایو ٹیکس کا کورس کریا جا سکتا ہے ۔

source-UrduPoint.

Tags
Show More

Mushahid Hussain

My Name is Mushahid Hussain Alvi I am a Web Designer

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Back to top button
Close
%d bloggers like this: