Health Articles

What is Pragmatic Mind?

What is Pragmatic Mind?

What is Pragmatic Mind?

پراگندہ ذہنی کا مطلب شدید دماغی خلل ہے،جس میں دماغ کا انتشار اور پچیدگیاں پیدا ہو جاتی ہیں۔دماغی انتشار کی بنا پر مریض کو دوسروں کی بات سمجھنے میں اور اپنی بات سمجھانے میں دشواری پیش آنے لگتی ہے۔وہ صحیح طور پر اپنی ذات اور جذبات کا اظہار نہیں کرپاتا۔
پراگندہ ذہنی کے بارے میں ایک غلط تصور عام ہے کہ اس کے مریض کی شخصیت دو حصوں میں تقسیم ہوجاتی ہے۔بعض اوقات مریض خود کو دو اور کبھی کبھار تین افراد بھی سمجھ بیٹھتا ہے۔

سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ ہم پراگندہ ذہنی کا صحیح مفہوم نہیں سمجھتے۔افسانہ طرازی کرنے والے یا ٹیلے وژن کے ٹاک شو میں حصہ لینے والے اس کے نت نئے مطالب و مفاہیم اخذ کرتے ہیں۔وہ دماغی انتشار جس کا اوپر ذکر کیا گیا ہے،انتہائی پچیدہ ہے۔

 میں مریض واہموں اور فریب خیال میں گرفتار ہوجاتا ہے۔

 کے علاوہ اسے مغالطے ہونے لگتے ہیں،نامعلوم آوازیں سنائی دینے لگتی ہیں اور خیالات کی رفتار تیز ہو جاتی ہے۔وہ دوسروں سے لاتعلق ہوجاتا ہے،اس کی ہمت جواب سے جاتی ہے اور وہ سست پڑ جاتا ہے،جس سے اس کی کارکردگی متاثر ہوتی ہے۔مریض میں یہ منفی رویّہ پیدا ہوجاتا ہے کہ اس کی قوتِ ارادی میں کمی ہوگئی ہے۔وہ کسی کام کو کرنے کا ارادہ کرتا ہے ،

لیکن پھر خود ہی اسے ملتوی کردیتا ہے۔یہ علامات صرف ادویہ سے ختم نہیں ہوتیں۔مریض ذہنی طور پر اتنا مفلوج ہوجاتا ہے کہ کسی کام کا لائق نہیں رہتا۔

عام طور پر سب اس پر متفق ہیں کہ پراگندہ ذہنی کسی ایک وجہ سے نہیں،بلکہ کئی وجوہ سے ہوتی ہے۔دنیا کی مجموعی آبادی کا ایک فی صد اپنی زندگی میں کبھی نہ کبھی اس میں مبتلا ہوتا ہے۔پراگندہ مورثی طور پر بھی ہو جاتی ہے ۔اگر خاندان کے کسی فر د کو کوئی بیماری ہو تو اس کا امکان ہے کہ دوسرے بھی اس میں مبتلا ہوجائیں گے۔کچھ افراد کو یہ بیماری محض بے احتیاطی کی بنا پر لگ جاتی ہے،یعنی وہ شوقیہ بھنگ پینے لگتے ہیں یا کوکین اور ایمفیٹا من جیسی ادویہ کھانے لگتے ہیں

(ایمفیٹامن نزلے،بخار،افسردگی، اور مٹاپے میں کھائی جاتی ہے،لیکن اس کے منفی اور پہلوئی اثرات زیادہ ہیں)۔یہ بیماری ایسے افراد کو بھی ہوجاتی ہے،جو ہیجان خیز،آزردہ یا دہشت ناک یادوں میں گم رہتے ہیں۔ایسے افراد جو اپنے بارے میں زیادہ سوچنے لگتے ہیں،خود کو برباد کربیٹھتے ہیں۔

پراگندہ ذہنی کی بنا پر کچھ افراد کا رویہ جارحانہ ہوجاتا ہے اور وہ تشدد پر اتر آتے ہیں۔وہ ایسا کیوں کرتے ہیں؟اس کے بارے میں کوئی رائے قائم کرنا دشوار نہیں ہے۔وہ ارتکاز توجہ کے لیے تمباکو نوشی یا زیادہ کافی پینے کی طرف مائل ہوجاتے ہیں اور یہ سمجھتے ہیں کہ ان سے فہم وادراک میں اضافہ ہو جائے گا۔

مذکورہ اشیا پر اگندہ ذہنی کا باعث بن جاتی یااس میں اضافہ کردیتی ہیں۔تمباکونوشی سے واہموں میں بھی اضافہ ہوجاتا ہے اور کیفین والی اشیا کی زیادتی سے اضطراب و تشویش بڑھ جاتی ہے۔یہ دونوں بڑھ کر خللِ دماغ میں تبدیل ہوجاتی ہیں۔

چناں چہ مریض عجیب و غریب حرکتیں کرنے لگتا ہے ،کیوں کہ حد سے زیادہ نکوٹین اور کیفین سے اس کی ذہنی کیفیت بگڑتی چلی کاتی ہے۔کچھ افراد کو بے معنی آوازیں سنائی دیتی ہیں۔یہ ان کے دماغی بگاڑ کی بنا پر ہوتا ہے۔جب وہم بڑھ جاتا ہے تو مریض کو شکوک وشبہات گھیر لیتے ہیں اور اسے ایسا محسوس ہوتا ہے،جیسے ہر شخص اس کے خلاف سازش میں مصروف ہے۔ایسے افراد جو مریض کے قریب ہوتے ہیں،وہ بعض اوقات مریض کے تشدد کا نشانہ بھی بن جاتے ہیں۔

یہ حقیقت ہے کہ مریض کا رویّہ کسی بھی موقع پر جارحانہ ہوجاتا ہے۔اور وہ تشدد پر اتر آتا ہے۔لیکن ایسا بہت کم ہوتا ہے،اس لیے کہ مریض اپنی ذات کے خول میں بند رہتا ہے۔وہ ہر وقت اپنے ہی بارے میں سوچتا رہتا ہے۔

منشیات استعمال کرنے والوں یا غلط ادویہ کھانے والوں کی نسبت،وہ مریض جو پراگندہ ذہنی کا شکار ہوتے ہیں،تشدد کی طرف زیادہ مائل ہوتے ہیں۔پراگندہ ذہنی کے بارے میں یہ سوال کیا جاتا ہے کہ کیا یہ ایک ہی کیفیت ہے یا بیک وقت کئی کیفیات ،جومریض پر طاری ہوجاتی ہیں؟حقیقت یہ ہے کہ مریض پر ایک وقت میں ایک ہی کیفیت طاری ہوتی ہے۔

کچھ معاشرے ایسے ہیں،جہاں پراگندہ ذہنی کو مرض نہیں سمجھا جاتا۔مریض اگر کسی غیر فطری علامت کا اظہار کرتا ہے تو اسے ذہنی کج روی کا نام دیا جاتا ہے۔

واہمے اور شک وشبہے کے علاج کے لیے میڈیکل اسٹوروں پر ادویہ دستیاب ہوسکتی ہیں،مگر انہیں معالج سے پوچھے بغیر کھانے سے مریض کو نقصان پہنچ سکتا ہے ۔کئی کمپنیوں نے پراگندہ ذہنی کے لئے دوائیں تیار کرنا ہی چھوڑدی ہیں ،البتہ اس بیماری میں ایک خاص قسم کی تھراپی فائدہ پہنچاتی ہے،جس میں مریض کے فہم وادراک کو بڑھایا اور اس کے شعور کو بیدار کیا جاتا ہے۔ضرورت اس بات کی ہے کہ ابتدائی مرحلے ہی سے مرض کا پتا چلا کر اس کا علاج کیا جائے۔مریض کے رویے سے آگاہی حاصل کی جائے،پھر اس کا تجزیہ کیا جائے۔

اس مرض میں مریض کو تنہا نہ چھوڑا جائے،ورنہ وہ اپنی خیالی دنیا میں مگن رہے گا۔مریض کو اچھے اور مخلص رفیقوں میں رکھیں اور اس کو پیار محبت سے سمجھائیں کہ یہ لوگ تم سے محبت کرتے ہیں،ان کے ساتھ ہنسو،بولو اور باتیں کرو۔وہم،بے اعتباری اور دوسروں پر شک اسی وقت دور ہوسکتا ہے،جب مریض کوئی مفید مشغلہ اپنائے یا اچھے دوستوں میں وقت گزاری کرے۔

Praggary mental means severe brain disorders, which cause brain disorders and pensions. Due to anxiety, due to anxiety, the patient starts having difficulty in understanding others and explaining them. And do not express feelings.

An incorrect concept of pragmatic mind is common that the patient’s personality is divided into two parts.
Sometimes patients give themselves and sometimes three people also understand.

It shows that we do not understand the correct meaning of pragmatic intelligence. Those who take part in the talk show of a funky or happy vision show new experiences. The mental disorder mentioned above is mentioned above. Yes, it’s very complicated.

In this, the patient is arrested in anxiety and fraud.

Apart from this, it seems to be lazy, unknown sounds begin listening and speeds up the speed. It becomes contrary to others, its courage goes out of response and slowly, its performance It is influenced by a negative attitude in patients that their power has decreased in intentions. He intends to do something, but then he adjourns himself.

These symptoms are not endangered by adultery. The patient is mentally intriguing that no work is worthwhile.
Usually, all agree that prostitutes are not mentally due to any reason, but for a number of reasons. A percentage of the population of the country is sometimes in its lifetime. .If there is any disease in the family of a family, it is likely that others will suffer.

Some people take this illness only on account of unconsciousness, that they may drink amateur or drink food like cocaine and amphetesta (amphetamine nausea, fever, depression, and obesity), but it is eaten Negative and aspect effects are high). This illness also occurs in people who are lost in fun, tired or terror memories.

People who start thinking more about themselves, destroy themselves.
Some people behave in aggression for pragmatic mental aggression and fall into violence. Why do they do this? It is not difficult to establish any opinion about it. They have to drink or drink enough to pay attention The sides are worried and they understand that they will increase understanding.

The products mentioned above increase or increase it. Increased winds also increase, and excessive caffeine products increase anxiety and anxiety. These two are often increased into disrupted brain.
Let’s say that the patient looks strange and strange, because his mental health worsens more than the nicotine and caffeine. What is Pragmatic Mind

Some people hear unusual sounds. It is due to their mental disorder. When the vimam increases, the patient surrounds doubts and feels like it is like everyone engaged in conspiracy against him. There are people who are near the patient, sometimes they become a victim of the patient’s abuse.
The fact is that the patient’s behavior aggressively strikes on any occasion.

And he comes to violence.But it is very low, because the patient is locked in his face. He keeps thinking about himself at all times. Those patients who suffer from prevalent mental health are more determined towards violence. It is questioned about psychologists that whether it is the same quality or at times, many conditions, which occur on the basis of the case? The patient has the same quality at one time.

There are some communities where pragmatic mind is not considered as a disease. If a patient expresses an illicit sign, it is called a mental dog.

Depression on medical stores may be available for treatment and suspicions, but eating them without the physician can harm the patient.  Many companies have stopped preparing medicines for intriguing mental illness. Although in this disease A special type of therapy is beneficial, which has increased patient understanding and its awareness is awakened.

It is necessary that the initial stage is diagnosed with a disease card. It should be informed of the behavior of the patient, then it should be analyzed. What is Pragmatic Mind

In this disease, the patient should not be left alone, or he will keep in a happy world. Keep the patient in good and sincere attitude and convince him that he loves you, laugh with them. Talk and talk. Suspiciousness, self-determination, and other doubts can be overcome at the same time, when the patient adopts a useful attitude or takes time to good friends. source Urdupoint.

Tags

Related Articles

5 Comments

  1. As I web-site possessor I believe the content matter here is rattling great , appreciate it for your efforts. You should keep it up forever! Good Luck.

  2. Howdy would you mind letting me know which hosting company you’re using? I’ve loaded your blog in 3 completely different internet browsers and I must say this blog loads a lot quicker then most. Can you suggest a good internet hosting provider at a fair price? Cheers, I appreciate it!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Close
Close