Health Articles

Khud Itmadi Ka Kamyabi Ya Nakami Mein Ehum Kirdaar

Spread the love

Khud Itmadi Ka Kamyabi Ya Nakami Mein Ehum Kirdaar

Khud Itmadi Ka Kamyabi Ya Nakami Mein Ehum Kirdaar

ہم اپنے بارے میں جو احساس رکھتے ہیں وہ ہمارے تجربات کے تمام پہلوﺅں کو متاثر کرتا ہے۔ مثلاً ہم کیسے کام کرتے ہیں؟ یا والدین کی حیثیت سے کس طرح کا رویہ اپناتے ہیں؟ نفسیات کی رو سے ہمارا رویہ ہماری اس سوچ سے بہت متاثر ہوتا ہے جو ہم اپنے بارے میں رکھتے ہیں۔ یوں خود اعتمادی کامیابی یا ناکامی میں اہم کردار ادا کرتی ہے۔ ساتھ ہی یہ ہمیں اپنے اور دوسروں کے بارے میں سمجھنے میں بڑی مددگار ثابت ہوتی ہے۔

ہماری کوئی بھی رائے اتنی اہم نہیں جتنی کہ وہ رائے جو ہم خود کے بارے میں رکھتے ہیں۔خود اعتمادیکیا ہے؟ آئیے اسے سمجھنے کی کوشش کرتے ہیں۔ اس کے دو پہلو ہیں ایک اپنی قابلےت کا احساس اور دوسراذاتی ورتھ کا احساس، دوسرے لفظوں میں خوداعتمادی اور عزت نفس کا مجموعہ ہے۔

خوداعتمادی اور عزت نفس پیدا کرنے کی صلاحیت انسانی فطرت میں شامل ہے۔

اس میں کوئی شک نہیں کہ ہر فرد کو بلند درجے کی خود اعتمادی کا حامل ہونا چاہیے تاہم بدقسمتی سے بہت سے لوگوں کے ساتھ ایسا نہیں ہے اور وہ عدم تحفظ، احساسِ جرم اور زندگی میں بھرپور شمولیت کے خوف جیسے احساسات کا شکار ہوتے ہیں۔ اس قسم کے احساسات ہمیشہ فوراً سامنے نہیں آتے مگر یہ درپردہ موجود ہوتے ہیں۔ تاہم یہ منفی احساسات عمر کے بڑھنے کے ساتھ اپنے بارے میں مثبت سوچ رکھنے سے دور ہوتے جاتے ہیں۔خود اعتمادی میں ترقی کرنے کیلئے ضروری ہے کہ اس سوچ کو پروان چڑھایا جائے کہ ہم زندہ رہنے اور خوش رہنے کا استحقاق رکھتے ہیں۔خود اعتمادی بڑھنے کا مطلب ہماری خوشی میں اضافہ ہے۔ اگر ہم اس بات کو سمجھ سکیں تو پھر ہمیں اس حقیقت کا ادراک ہونا چاہیے کہ ہمارے اندر خود اعتمادی بڑھانے کی صلاحیت موجود ہے۔ خود اعتمادی بڑھانے کے بہت سے فوائد ہیں مثلاً جتنی زیادہ ہماری خود اعتمادی ہو گی اتنا ہی ہم زندگی کی تلخیوں کا مقابلہ کرنے اور اپنے کام میں زیادہ تخلیقی اور زیادہ کامیابی کی توقع کر سکیں گے۔مزیدبراں ہم زندگی کے بارے میں پُرامید ہوں گے اور ہمارے تعلقات دوسروں سے خوشگوار ہوں گے۔اس کے علاوہ ہماری خود اعتمادیجتنی عمدہ ہو گی اتنا ہی زیادہ ہم دوسروں کی عزت کریں گے۔

ہم انہیں اجنبی محسوس نہیں کریں گے اور اندر سے خوفزدہ نہیں ہوں گے۔ خود اعتمادی خواہ وہ کسی بھی درجے کی ہو وہ ہمارے اندر موجود ہوتی ہے۔ یہ وہ احساس اور سوچ ہے جو ہم اپنے بارے میں رکھتے ہیں نہ کہ وہ خیال جو دوسروں کا ہمارے بارے میں ہے۔زندگی کے ابتدائی برسوں میں ہمارے تجربات ہماری شخصیت اور خود اعتمادی میں اہم کردار ادا کرتے ہیں مگر ہماری پرورش جیسی بھی رہی ہو ایک بالغ فرد کی حیثیت سے معاملہ اب ہمارے اپنے ہاتھ میں ہوتا ہے۔جس طرح کوئی بھی دوسرا فرد ہمارے لئے سانس نہیں لے سکتا اور نہ کوئی ہماری جگہ سوچ سکتا ہے اسی طرح کوئی بھی خوداعتمادی اور اپنی ذات سے محبت بھی ہمارے اوپر طاری نہیں کر سکتا۔جس طرح دوسروں کا Acclaim ہمارے اندرخود اعتمادی پیدا نہیں کر سکتا اسی طرح علم، ہنر، مادی اشیائ، شادی رفاحی کام اور چہرے کی زیبائش ہماری خوداعتمادی کو بڑھا نہیں سکتیں۔ یہ چیزیں ہمیں بعض صورتوں میں عارضی طور پرراحت تو دے سکتی ہیں مگر اس کو ہم خود اعتمادی نہیں کہہ سکتے۔اگر خود اعتمادی اس قےامت کا نام ہے کہ میں زندگی کیلئے موزوں ہوں یا ایک ایسے ذہن کا جو خود پر بھروسہ کرتا ہے تو پھر اس کا تجربہ کوئی دوسرا شخص نہیں کر سکتا سوائے ”میرے“۔

صحت مند خود اعتمادی کا اظہار خودنمائی، خود کو برتر سمجھنے یا دوسروں کو کمتر سمجھنے میں نہیں ہوتا اور نہ ہی شیخی بگھارنا یا اپنی صلاحیتوں کو بڑھا چڑھا کر پیش کرنا ہے۔ صحت مند خود اعتمادی کی نمایاں خصوصیات میں سے ایک اہم خصوصیت یہ ہے کہ ایک فرد کی ایسی حالت ہے جس میں وہ اپنے ساتھ اور دوسروں کے ساتھ حالت جنگ میں نہیں ہوتا۔ صحت مندخود اعتمادی کی اہمیت اس بات میں مضر ہے کہ یہ بنیاد ہے اُن صلاحیتوں کی جنہیں پا کر ہم ان کا جواب مثبت انداز میں دیتے ہیں۔

What we feel about ourselves affects all aspects of our experiences. For example, how do we work? Or how do you adopt the attitude of parents? Our attitude towards psychology is very influenced by our thinking that we keep about ourselves. Thus self-confidence plays an important role in success or failure. Along with this it is a great help to understand us and others.

None of our opinions are so important as the opinion that we have about ourselves. Let’s try to understand it. There are two aspects of this, one’s feelings and feelings of other heritage, in other words there is a combination of self-respect and respect.

Ability to create self-esteem and respect is included in human nature.

There is no doubt that every person should be self-esteemed, but unfortunately, it is not with many people, and they suffer from insecurity, sense of guilt and fear of full participation in life. Such feelings do not always come in front of them, but they are in danger. However, these negative feelings get away from keeping positive thinking about themselves with the increase of age.

To develop self-confidence, it is important to assume that we have the privilege to survive and live. Increasing self esteem means our happiness is increased. If we can understand this, then we should be aware of the fact that we have the ability to self-esteem. There are many benefits to enhancing self-confidence, as much as our self-esteem, the same will be able to compete with life’s tricks and more creative and more success in our work. Khud Itmadi Ka Kamyabi

Furthermore we will be happy about life and our relations will be pleasant to others. Apart from this, our self-esteem will be as wonderful as the more we will honor others. We will not feel strangers and will not be afraid of it. Self esteem, if any, he is present in us. This is the feeling and thought that we keep about ourselves and not think that others are about us.

In our early years of our lives, our experiences play a role in our personality and self-esteem, but as we have grown up, the matter is now in our own hands as an adult person. Just like any other person is not breathing for us No one can think of our place, so no self-respect and love of ours can also move on us.

Just as the acclaim of others can not create our inner faith, similar knowledge, skills, material evangelism, and marriage emotions can not enhance our self-determination. These things can temporarily give us some of the conditions, but we can not say that we can trust ourselves. If self-esteem is the name of this conviction that I am suitable for life or a person who trusts himself No other person can experience it except “My“. Khud Itmadi Ka Kamyabi

Self-confidence in self-determination is self-determination, self-determination or not considered to be lesser than others, nor is it to bury bouncing or to increase its capabilities. One of the main features of healthy self-esteem features is that there is a condition of an individual in which he is not in a state of war with others and with others. The importance of healthy self-esteem is incomplete that it is the basis of the capabilities that we respond to positively.

sourceUrduPoint.com.

Tags

Related Articles

8 Comments

  1. Excellent beat ! I wish to apprentice even as you amend your website, how could i subscribe for a weblog web site? The account aided me a acceptable deal. I had been tiny bit acquainted of this your broadcast provided shiny transparent idea

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Back to top button
Close
Close