Tips & Suggestions

End of the appendix

End of the appendix

End of the appendix

بیس سالہ ارشاد کو دوروز سے پیٹ کے نچلے حصے میں درد کی شکایت تھی ۔ اس نے درد کی طرف کوئی توجہ نہیں دی تو وہ بڑھ گیا۔اسے کھانسی آنے لگی اور وہ چھینکنے بھی لگا۔جب وہ ناہموار سڑکوں پر سے گزرتا تو تکلیف بڑھ جاتی تھی ۔جب معاملہ حد سے بڑھ گیا تو اس نے معالج سے ملنے کا فیصلہ کیا۔معالج نے بتایا کہ اسے اپنڈکس (اندھی آنت)کادرد ہے ،لہٰذا اسے فوراً سرجری کر الینی چاہیے،کیوں کہ تعدیہ (انفیکشن )پھیل رہا تھا اور کسی بھی لمحے اپنڈکس پھٹ سکتا تھا۔

اپنڈکس ایک چھوٹی سی نلکی ہے ،جو بڑی اور چھوٹی آنت کے جوڑ پر پیٹ کے نچلے حصے میں کولھے کی ہڈی کے قریب ہوتی ہے ،جس کی لمبائی تقریباً چار انچ اور سات یا آٹھ سینٹی میٹر اُس کا قطر ہوتا ہے ۔ڈاکٹر ساجد شیخ ،جو فیصل آباد کے ایک اسپتال میں جنرل سرجن ہیں ،کہتے ہیں کہ اس میں اچھے بیکٹیریا کا ذخیرہ ہوتا ہے ،جو نہ صرف ہاضمے میں مدد دیتا ہے ،بلکہ بیماریوں اور تعدیے کے خلاف مدافعت بھی کرتا ہے ۔

چنا ں چہ اسے مدافعتی نظام کا حصہ کہنا چاہیے ۔
امریکا کے گردوں اور ہاضمے کے ادارے کا کہنا ہے کہ دنیا کی آبادی کا پانچ فی صد حصہ اس مرض میں مبتلا ہے ۔اپنڈکس کا درد عمر کے کسی بھی حصے میں ہو سکتا ہے ،لیکن زیادہ تر تیرہ سے بیس برس کے درمیان ہوتا ہے ۔ڈاکٹر ساجد کا کہنا ہے کہ یہ مرض پاکستان میں کم ہے ،لیکن اس کے صحیح اعداد وشمار پیش کرنے سے وہ قاصر ہیں ،اس لیے کہ قومی سطح پر اس سلسلے میں کوئی بڑا کام نہیں ہوا ہے ۔

بیکٹیریا ،وائرس اور نقصان پہنچانے والے دوسرے جراثیم تعدیہ پیدا کر دیتے ہیں ،جس سے اپنڈکس پھٹ جاتا ہے ۔ڈاکٹر ساجد کا کہنا ہے کہ اپنڈکس کے پھٹنے سے نقصان دہ زہر یلے مادّے نکل کر پیٹ میں پھیل جاتے ہیں ،جس سے شدید جلن اور سوزش ہوتی ہے۔
اپنڈکس کی صورت میں پیٹ میں دائیں جانب ناف کے قریب درد ہوتا ہے،بھوک اُڑ جاتی ہے ،قے اور متلی ہوتی ہے ،بخار آجاتا ہے ،پیشاب کرنے میں تکلیف ہوتی ہے ،قبض ہوجاتا ہے ۔
اپنڈکس کے درد کا اتفاقاً پتا چل جاتا ہے ،ورنہ محض علامات سے پتا نہیں چلایا جا سکتا ،اس لیے کہ دوسری بہت سی بیماریوں میں بھی ایسی ہی علامات ظاہر ہوتی ہیں ،مثلاً ریاح کا درد،پیشاب کی نالی میں درد ہونا ،مثانے یا پتّے میں درد ہونا۔

خواتین کی بیضہ دانی میں جب کوئی بیماری ہوتی ہے تو ایسی ہی علامات نظر آتی ہیں ۔جس مقام پر درد ہورہا ہو،اسے دبا کر دیکھا جائے تومعلوم ہوجاتا ہے کہ یہ اپنڈکس کا درد ہے ۔بلڈ ٹیسٹ سے بھی صورت حال واضح ہوجاتی ہے ،اس لیے کہ سفید خلیوں کی کمی یہ ظاہر کردیتی ہے کہ جسم میں تعدیہ ہوچکا ہے اور سفید خلیے مدافعت کرنے میں مصروف ہیں ۔اپنڈکس کی سوزش اور جلن کا پتا چلانے کے لیے ایم آر آئی (MRI)اور سی ٹی اسکین(CT SCAN)سے بھی مدد لی جا سکتی ہے ۔

اپنڈکس میں درد ہویا سوجن ،سرجری اس کا واحد علاج ہے ۔اس سرجری کی دو قسمیں ہیں :معدے بینی سرجری(LAPAROSCOPIC SURGERY)جوجدید ترین تکنیک ہے ،جس میں ننھا سا کیمرا بھی استعمال کیا جاتا ہے ۔پھر پیٹ کی اوپری جِلد میں چھوٹے چھوٹے شگاف لگا کر تعدیہ زدہ اپنڈکس کو نکال دیا جاتا ہے ۔

جب کہ روایتی سرجری(TRADITIONAL SURGERY)میں ایک لمبا شگاف لگا کر اپنڈکس کو نکال دیا جاتا ہے ۔سرجری کے نام پر مریض رضا مند نہیں ہوتا اور منفی رویّہ اختیار کرتا ہے ۔ڈاکٹر ساجد کہتے ہیں کہ معدہ بینی سرجری میں چوں کہ بہت ہی چھوٹے شگاف لگائے جاتے ہیں ،لہٰذا زخم جلد مند مل ہوجاتے ہیں ۔معدہ بینی سرجری کی وضاحت کرتے ہوئے ڈاکٹر ساجد نے کہا کہ سرجری کے بعد بارہ گھنٹے گزرنے پر مریض احتیاط سے حرکت کر سکتا ہے ۔اسے ضد حیوی ادویہ (اینٹی بایوٹکس) دی جاتی ہیں ،جن سے زخموں میں تعدیہ نہیں ہوتا۔مریض کو دس سے چودہ روز تک کوئی سخت کام نہیں کرنا چاہیے ،خاص طور پر اسے بھاری چیزیں نہیں اٹھانی چاہییں ۔مریض خوب گہری اور پُر سکون نیندلے تو اس کے زخم جلد مندمل ہوجاتے ہیں ۔

ڈاکٹر ساجد کے مطابق اپنڈکس کا درد ادویہ سے ختم نہیں ہوتا،البتہ وہ افراد جو ریشے والی غذائیں زیادہ کھاتے ہیں ،ان کا درد کم ہوجاتا ہے ۔ریشے کے حصول کے لیے بغیر چھنے آٹے کی روٹی،پھل اور سبزیاں کھائی جا سکتی ہیں ۔ابتدامیں اس مرض کا پتا چل جائے اور ا

حتیاط کرلی جائے تو تعدیے کا علاج ممکن ہے ۔
ڈاکٹر متنبہ کرتے ہیں کہ دافع درد ادویہ نہ کھائیں ،اس لیے کہ ان سے اپنڈکس کے پھٹنے کا عمل تیز ہوجاتا ہے ۔بہتر ہے کہ مریض دود ھ میں پانی ملا کریا پھلوں کا رس پیے۔اس سے جسم سے زہریلے مادّے خارج ہوجاتے ہیں ،جن سے تعدیہ اور سوزش ہوتی ہے۔
آپ کو یہ جان کر خوشی ہوگی کہ آپ اپنڈکس کے بغیر کسی زندہ رہ سکتے ہیں ۔اپنڈکس کے نکل جانے سے مریض پرکوئی اثر نہیں پڑتا ۔اپنڈکس نکلنے سے اگر مریض معمولی سے تعدیے میں مبتلا ہوجائے تو سمجھ لینا چاہیے کہ اس کی قوتِ مدافعت پہلے سے کم زور تھی ۔

A twenty-year-old Arshad complains of the pain in the lower part of the stomach. He did not pay attention to the pain, he grew up. He started to cough and he was hiding. When he went through unusual roads, the problem was increased .

When the matter increased, he got to meet the physician. The decision was made. The physician told that he is apprehensive, blind, so he should be treated immediately, because the infection was spreading and he could burst any other appendix.

Appendix is ​​a small tap, which is near the bone at the bottom of the stomach on a large and small intestinal joint, which is  End of the appendix approximately four inches and seven or eight cm in diameter. Dr Sajjad Sheikh, Those who are General Surgain in a Faisalabad hospital, say that it contains good bacteria, which not only helps in digestive diseases but also protects against diseases and diseases.

Say it should be called part of the immune system.
The United States kidney and digestive organization says that five percent of the world’s population is suffering from this disease. Pancakes can be in any part of the age of the age, but mostly between twenty and two years.

Dr. Sajid says that this disease is low in Pakistan, but they are unable to present the correct figures, because there is no major work in this regard at the national level.

Bacteria, viruses, and other germs that cause damage to the appendix burst, says Dr Sajjad, that the appendix exploded by causing harmful toxic substances and spreads in the stomach, It is inflammatory.

In the case of an apple, there is a pain near the nab on the right side of the belly, hungry, vomiting and nausea, fever fever, it is difficult to urine, it takes control.End of the appendix

Appendix’s pain seems to be an accident, or simply symptoms can not be found, because such symptoms occur in many other diseases, such as rheumatic pain, urinary traumatic pain, bladder or pain Leaf pain

When there is a disease in women’s illness, similar symptoms are visible. It is painful to see if it is painted on the spot, it is known to be depressed.

The blood test also shows the situation, because the lack of white cells shows that there is an increase in the body and the white cells are involved in interfere. For example, to diagnose pancreatic inflammation and irritation, MRI) and CT SCAN can also help.
Surgery is painful, it is the only treatment of the surgery. There are two types of surgery: The most commonly used technique of LAPAROSCOPIC SURGERY, which is also used by nausea cameras.
Again the upper skin of the stomach, the small substance in the upper skin is excluded.

As a long-term crack in the TRADITIONAL SURGERY, the appendix is ​​removed. In patients’s name, the patient does not have a healthy and negative attitude. Dr. Sajid says that the stomach should be in a syrup surgery. Small sticks are used, so wounds get sooner.End of the appendix

Explaining binary surgery, Dr. Sajjad said that the patient can take care of the patient after 12 hours after surgery. It is given to be antivirus (antibiotics), which does not result in wounds. There should be no hard work for fourteen days, particularly it should not take heavy things. If the patient gets deep and comfortable sleeping then his wound hurts quickly.

According to Dr. Sajjad, the appendix’s pain does not end with depression, but those who eat more fiber nutrients, reduce their pain. The bread, fruits and vegetables can be eaten without lining. Early diseases may be diagnosed and cautioned if treatment is possible.

Doctors warn that the pain does not eat acne, because the apprehension of extortion increases.
It is better to drink juice mixed with water in the patient’s milk. It removes the poisonous substances from the body, which is due to ration and inflammation. End of the appendix

You will be glad to know that you can survive without appendix. The patient does not have any effect on leaving the pancakes. If you have a slight disorder due to the patient withdrawal, then it should be understood that the power of immune first Was less than

sourceUrduPoint.com.

Tags
Show More

Mushahid Hussain

My Name is Mushahid Hussain Alvi I am a Web Designer

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Back to top button
Close
%d bloggers like this: