Tips & Suggestions

Dalain Khay

Dalain Khay

Dalain Khay

دالوں میں موجود فائبر کی وجہ سے خون میں کولیسٹرول کا لیول کم ہوتا ہے کولیسٹرول اگر بڑھتا جائے تو خون کی نالیوں کو بلاک کر سکتا ہے ۔اگر دل کو خون کی سپلائی کم یا بند ہو جائے تو اس کی وجہ سے ہارٹ ٹیک ہو سکتا ہے ۔اگر دماغ کو آکسیجن کی سپلائی متاثر ہو جائے تو اسٹروک ہو جاتاہے۔
کولیسٹرول کا لیول نارمل رکھنا سب کے لیے ضروری ہے۔ذیابیطس کے مریضوں میں کولیسٹرول کو قابو میں رکھنا زیادہ ضروری ہے ذیابیطس میں خون میں شوگر کے زیادہ ہونے سے خون کی نالیوں کی صحت پر منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

دالیں ذیابیطس کے مریضوں کے لیے بہترین ہیں کیونکہ فائبر موجود ہونے کی وجہ سے دال کھانے سے مریضوں کے خون میں شوگر کی سطح میں زیادہ اضافہ نہیں ہوتا۔دال چاول اکثر لوگوں کی پسندیدہ خوراک ہے ۔

چاول اگر براؤن استعمال کیے جائیں تو بہتر ہے۔
عام لوگوں کا خیال ہے کہ گوشت میں ضروری پروٹین اور وٹامن موجود ہیں مگر گوشت کی قیمتیں زیادہ ہونے کی وجہ سے لوگوں کی پہنچ سے دور ہوتا جارہا ہے ۔

اگر گوشت مہنگا ہے تو دال پروٹین کا ذریعہ ہو سکتی ہے ۔دال اپنی افادیت کے لحاظ سے کسی طرح گوشت سے کم نہیں بلکہ گوشت کا زیادہ استعمال مضر ہے جبکہ دال ایک بے ضرر اور مفید غذا ہے۔دالوں کے کچھ فوائد ذیل میں دیے جارہے ہیں۔
دالیں فائبر،وٹامن اور معدنیات کی موجودگی کی وجہ سے دل کی صحت کے لیے مفید ہیں۔ دالوں میں فولیٹ اور میگنیشیم پائے جاتے ہیں ۔میگنیشیم کی کمی سے دل کی بیماریوں کا خطرہ بڑھ جاتا ہے ۔دالوں کے باقائدہ استعمال سے یہ کمی دور کی جا سکتی ہے۔

ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ زیادہ گوشت کھانا آنتوں کی صحت کے لیے مضر ہے ۔اس سے آنتوں کے کینسر کا خطرہ بڑھ سکتا ہے ۔فروٹ،سبزیاں اور دالیں کھانے سے آنتوں کی صحت بہتر رہتی ہے اور ان میں کینسر کا خطرہ کم ہو جاتا ہے ۔دالیں کھانے سے قبض کی شکایت بھی دور ہوتی ہے ۔یہ فوائد حاصل کرنے کے لیے ہفتے میں کئی بار دال کھانی چاہیے۔
چاول میں دال ڈال کر کھانے کے بجائے ذیابیطس کے مریضوں کو دال میں چاول ڈال کر کھانے چاہئیں۔دال کا سوپ بھی بنایا جا سکتا ہے ۔دال دھو کر اس میں پانی،نمک،مرچ اور ہلدی ملا کر پکائیں۔ایک ٹماٹر کاٹ کر ڈال دیں ۔جب دال نرم ہو جائے تو اس کو بلینڈ کرلیں ۔ریگو لر دال سے اس کو زیادہ پتلا رکھنا ہو گا۔

دالوں میں پروٹین ہوتا ہے ۔پروٹین کی ضرورت دالوں سے پوری ہو سکتی ہے ۔کئی دالوں کو ملا کر بھی پکایا جا سکتاہے۔
دالوں میں فولاد موجود ہوتا ہے ۔فولاد سے خون کے سرخ خلیے بنتے ہیں ۔اگر فولاد کی کمی ہوتو جسم میں خون کی کمی ہو جاتی ہے ۔خواتین میں فولاد کی کمی بہت عام ہے ۔خون کے سرخ خلیے آکسیجن کی سپلائی کاکام کرتے ہیں اور اگر ان کی کمی ہوتو مریضوں میں تھکن کی شکایت ہو سکتی ہے۔

دالوں میں فولیٹ موجود ہوتا ہے۔حاملہ خواتین میں فولیٹ کی کمی کی وجہ سے نومولود بچوں میں جسمانی خرابیاں پیدا ہو جاتی ہیں۔ ان میں سے ایک بیماری نیورل ٹیوب ڈیفیکٹ ہے ۔اس بیماری میں مبتلا بچے تمام زندگی کے لیے معذور ہو سکتے یں۔
اگر وزن کم کرنے کی کوشش کرنے والوں کو دالوں کو اپنی خوراک کا باقاعدہ حصہ بنائیں۔دالوں میں کئی ضروری وٹامن اور نمکیات موجود ہوتے ہیں۔ ان سے پروٹین حاصل ہوتے ہیں اور چکنائی نہ ہونے کے برابر ہوتی ہیں ۔ایک کپ پکی ہوئی دال میں صرف 230کیلوریز ہوتی ہیں۔

دال ایک مکمل غذا ہے ۔ہم دالوں کو اپنی خوراک کا حصہ بنا کر اپنے جسم کی کئی غذائی ضروریات بہت حد تک پوری کر سکتے ہیں۔

Due to the fiber present in the pulses, the level of cholesterol in the blood is lower. If cholesterol grows, it can block blood canals. If the heart is reduced or closure of the blood, Dalain Khay  it may cause a hazard .If the brain is affected by oxygen supply, it becomes stroke. Dalain Khay

The cholesterol level is essential for everyone to take care. It is important to control cholesterol in patients with diabetes. The risk of blood sugar in diabetes has negative effects on blood drainage.

Pulses are best for diabetes patients because of the presence of fiber due to the presence of pulses, sugar levels do not increase in the blood levels of patients. Dairy rice is often the favorite food of the people.

Better if rice is used brown.

Ordinary people believe that there are essential proteins and vitamins in the flesh, but the prices of meat are getting away from the reach of people.

If meat is expensive then it can be the source of dal protein .In the use of its utility, no use is less than meat, but more use of meat is implicit, while pulses are a harmless and useful diet. Some benefits of pulses are being given below. Are there
Pulses are useful for heart health due to the presence of fiber, vitamins and minerals. Polyethylene and magnesium are found in the pulses.

The decrease of magnesium increases the risk of heart diseases. Due to the regular use of cells, this decline can be removed.
Health experts say more meat is hazardous for intestinal health. It can increase the risk of intestinal cancer .The food, vegetables and dalses help improve intestinal health and reduce the risk of cancer. It is also possible to take a complaint.

It should take several times a week to get the benefits.
Instead of eating instead of eating, eating diabetes patients should eat the rice at the pulp. The dal soup can also be made. Wash it with water, salt, pepper and turmeric. Cut it a tomato Let it bundle it when the pulse is soft, it will have to keep it slim.

The pulses contain protein. The need for protein can be filled with pulses. Some pulses can also be cooked.

The pulses contain fadegia .Finally, red blood cells are formed .If there is a lack of fosure the blood decreases in the body. The lack of foscope is very common in the bacteria. The red cells of the blood do oxygen supply and If they lack,Dalain Khay patients may have a lung complaint.

Polyethylene is available in the pulses. Due to lack of foliage in pregnant women, nutritious children cause physical disorders. One of these diseases is the neurulus tube defect. Children with this disease can be disabled for all life.

If the dalas make a regular part of their diet to the lentils, there are several essential vitamins and salts present in the cells. They get protein and are not equal to greasy. A cup cooked pulse consists of only 230 calories. Dalain Khay

The lentils are a complete diet. We can supply many nutritional needs of our body by placing the pulses as part of our diet.

sourceUrduPoint.com.

Tags

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Close
Close