Sugar Free Diets

Best dry fruits for diabetes patients

Best dry fruits for diabetes patients diabetes is a disease that patients suffer from the same problem as to which foods and nutrients. These patients are a cordite chart or acne sized rotating, which is considered to be necessary. Today we need these essential patients for diabetes Talking on vegetables, those who are considered to be the best for those patients.

The use of fruits is useful or hazardous!

Medical experts have different views on the use of fruits for diabetes patients.

A group of medical experts says that diabetes patients should be hazarded with the use of dried fats, because they are dry fruits, so they reduce the amount of water due to fresh fruit.

Due to this, the amount of nutrition and minerals present in the dishes make a difference between fresh fruits.
The second group is of those medical specialists who treat nervous nuts useful for human health.

According to research from the Canadian Tour Natnovascular Research Racer Chase, dry fruits are only nuts that are staggered, called nuts in English. They do not include fruits that are used by drying. It is said that nutritious nutrients are particularly effective with diabetes. Their regular use is possible to control blood sugar and cholesterol.

Almonds:
Almond is a nutritious diet that is full of vitamins, proteins, and minerals. Diabetes is called alcoholic beverages, which can be used by diabetes patients without any difficulty. According to researchers of Almond University Use is helpful in controlling diabetes and keeping the level of cholesterol.
According to researchers, 6 almonds are helpful in reducing sugar levels. In research, it also states that using almonds after eating, glucose and insulin levels remain in the body. Best dry fruits for diabetes patients
Walnut:
Medical experts recognize a nutritious diet with magnesium, fiber, omegala were fatty acids and lino-lip acid.
They say nutrients include vitamins, folic acid, zinc and protein, which also increase physical energy with low calories, while fiber and protein hunger extravagance and blood sugar level control. Helps. According to the observers, the insulin level is balanced in all those people who use nutrients daily.

Pistol:
Medical experts also consider the use of pistachios for patients with diabetes. According to them, it improves poultry insulin and glucose activity .Then medical researchers have reached a conclusion that the pitch is daily Dieting is very useful in many diseases, including diabetes.
Cashew:
In Caja, less fat is compared to other nutrients.
Apart from this, Kjo is rich in natural ingredients, which have the ability to absorb the blood insulin in the muscles of the cells, while “active compounds” in Kjo are preventing and preventing diabetes. Potassium helps prevent the level of sugar present in the body.
Peanuts:
According to the research published in the British Journal of Nutrition, women suffering from diabetes type-to-heart disease, if they start using pit-bitter in breakfast, help keep the glucose levels balanced and hunger in 8 to 12 hours.
So breakfast can make it normal for meals to be useful for diabetes patients.
Note: This article is intended to increase the reader’s information. Diabetes patients should consult your physician before using this diabetes. Best dry fruits for diabetes patients

ذیابیطس ایک ایسا مرض ہے ،جس کے مریض اسی پریشانی کا شکار رہتے ہیں کہ کون سی غذائیں کھائیں اور کون سی نہیں ۔ان مریضوں کاڈائٹ چارٹ ہو یا ایکسر سائز روٹین،احتیاط لازمی سمجھی جاتی ہے ۔آج ہم ذیابیطس کے مریضوں کے لیے ان ضروری میوہ جات پر بات کرنے جارہے ہیں ،جو ان مریضوں کی صحت کے لیے بہترین سمجھے جاتے ہیں۔
:میوہ جات کا استعمال مفید یا مضر
ذیابیطس کے مریضوں کے لیے میوہ جات کے استعمال پر طبی ماہرین کی رائے مختلف نظر آتی ہے ۔

طبی ماہرین کے ایک گروپ کا کہنا ہے کہ ذیابیطس کے مریضوں کو ڈرائی فروٹ کے استعمال سے پر ہیز کرنا چاہیے،کیونکہ یہ سوکھے ہوئے پھل ہوتے ہیں اس لیے ان میں تازہ پھل کے حساب سے پانی کی مقدار کم ہوتی ہے ۔

اس کی وجہ سے میوہ جات میں موجود تمام غذائیت اور منرلز کی مقدار میں تازہ پھل کے مقابلے میں زیادہ فرق آجاتا ہے ۔
دوسرا گروپ ان طبی ماہرین کا ہے ،جو سخت چھلکوں والے گری دار میووں کو انسانی صحت کے لیے مفید قرار دیتے ہیں ۔

کینیڈا کی ٹور نٹویونیورسٹی کے ریسر چرز کی ایک تحقیق کے مطابق خشک میوہ جات سے مراد صرف سخت چھلکوں والے گری دار میوے ہیں،جنہیں انگریزی میں Nutsکہتے ہیں ۔ان میں وہ پھل شامل نہیں ہیں،جن کو خشک کرکے استعمال کیا جاتا ہے ۔تحقیق کا روں کا کہنا ہے کہ سخت چھلکوں والے گری دار میووں سے خاص طور پر ذیابیطس کا کنٹرول موٴثر ہے ۔ان کے باقاعدہ استعمال سے خون میں شکر کی مقدار اور کولیسٹرو ل کو کنٹرول کرنا ممکن ہے۔
:بادام
بادام ایک غذائیت سے بھر پور غذاہے جو وٹامن،پروٹین اور منرلز سے بھر پورہوتی ہے ۔طبی ماہرین بادام کو ایک ایسا میوہ کہتے ہیں ،جسے ذیابیطس کے مریض بغیر کسی پریشانی کے استعمال کر سکتے ہیں ۔امریکن یونیورسٹی کے تحقیق کاروں کے مطابق بادام کا استعمال ذیابیطس کنٹرول کرنے اور کولیسٹرو ل کی سطح بر قرار رکھنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے ۔تحقیق کاروں کے مطابق روزانہ 6بادام شوگر کی سطح کم کرنے میں مددگار ثابت ہوتے ہیں ۔ایک تحقیق میں یہ بھی کہاگیا ہے کہ کھانے کے بعد بادام استعمال کرنے سے جسم میں گلوکوز اور انسولین کی سطح قابو میں رہتی ہے ۔
:اخروٹ
طبی ماہرین اخروٹ کو میگنیشیم ،فائبر،اومیگا تھری فیٹی ایسڈ اور لائنو لینک ایسڈ سے بھر پور غذا تسلیم کرتے ہیں ۔ان کا کہنا ہے کہ اخروٹ میں وٹامن ای،فولک ایسڈ ،زنک اور پروٹین وغیرہ بھی شامل ہیں ،جو بھوک کم کرنے کے ساتھ کم کیلیوریز کے ساتھ جسمانی توانائی بھی بڑھاتے ہیں جبکہ فائبر اور پروٹین بھوک کی اشتہا ختم کرنے اور بلڈ شوگر لیول کنٹرول کرنے میں مدد فراہم کرتے ہیں ۔ماہرین کے مطابق وہ تمام افراد جو اخروٹ کا استعمال روزانہ کرتے ہیں ان میں انسولین کا لیول متوازن رہتا ہے ۔
:پستہ
طبی ماہرین ذیابیطس کے مریضوں کے لیے پستے کے استعمال کو بھی مفید تصور کرتے ہیں ۔ان کے مطابق پستہ انسلوین اور گلوکوز کی کار کردگی کو بہتر بناتا ہے ۔اسپین کے طبی ماہرین ایک تحقیق کے بعد اس نتیجے پر پہنچے ہیں کہ پستے کو روزانہ کی خوراک میں شامل کرنا ذیابیطس سمیت کئی امراض میں انتہائی مفید ہے ۔
:کاجو
کاجو میں دیگر غذاؤں کے مقابلے میں کم چربی پائی جاتی ہے ۔اس کے علاوہ کاجو ایسے قدرتی اجزا سے مالا مال ہوتا ہے ،جو خون میں موجود انسولین کو عضلات کے خلیوں میں جذب کرنے کی بھر پور صلاحیت رکھتے ہیں جبکہ کاجو میں پائے جانے والے ”ایکٹو کمپاونڈز“ذیابیطس کو بڑھنے سے روکنے اور اس میں موجود پوٹاشیم جسم میں موجود شکر کی سطح کو بر قرار رکھنے میں مدد فراہم کرتاہے۔
:مونگ پھلی 
برٹش جرنل آف نیوٹریشن میں شائع شدہ تحقیق کے مطابق ذیابیطس ٹائپ ٹو کے مرض میں مبتلا خواتین اگر ناشتے میں پی نٹ بٹر کا استعمال شروع کردیں تو 8سے12گھنٹوں میں گلوکوز کی سطح متوازن اور بھوک کی اشتہار قابو پانے میں مدد ملتی ہے ۔چنانچہ ناشتے میں اسے کھانے کا معمول بنانا ذیابیطس کے مریضوں کے لیے مفید ثابت ہو سکتا ہے ۔
نوٹ :یہ مضمون قارئین کی معلومات میں اضافے کے لیے ہے ذیابیطس کے مریض ان خشک میوہ جات کے استعما ل سے قبل اپنے معالج سے بھی ضرور مشورہ کریں۔

source urdupoint.

Tags

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
error

Enjoy this blog? Please spread the word :)

Follow by Email
Facebook
Facebook
Twitter
Close
Close