Health Articles

Are you familiar with the Tea losses?

Are you familiar with the Tea losses?

Are you familiar with the Tea losses?

آج کا انسان ارتقائی مراحل کے عروج پر ہے ،اسے سائنسی اور مشینی ایجادات سے بے شمار آسانیوں کے حصول کے ساتھ ساتھ لاتعداد دشواریوں سے بھی پالا پڑا ہے ۔
مادی لحاظ سے بے شک انسان نے کامرانیوں کے کئی معرکے سرکرلیے ہیں مگر روحانی اور جسمانی لحاظ سے بہت سی گھمبیرالجھنوں میں الجھ کررہ گیا ہے ۔وہ موذی امراض پر قابو پاتے پاتے مزید مہلک امراض کے نرغے میں پھنستا جارہا ہے ۔یہ مہلک امراض انسان کی اپنی کاوشوں اور دریافتوں کا نتیجہ ہیں ۔

چائے انیسویں صدی کی معروف دریافت ہے اور شروع میں اسے بطور دوااستعمال کروایا جاتا تھا لیکن بعد ازاں کا روباری ذہن رکھنے والے افراد نے اسے بطور کنزیومرپروڈکٹ متعارف کرواکر لوگوں کو اس کے پلانے کی رغبت دلائی۔فی زمانہ پرنٹ اور الیکٹرونک میڈیا کی موثر تشہیری مہم نے چائے کو گھر کے ہر فرد کی لازمی ضرورت بنا دیا ہے ۔

یہی مشروب ایسے عوارض کا باعث ہے جن کے ہاتھوں آج کا انسان بہت زیادہ پریشان ہے ۔چائے ترقی یافتہ زمانے کا ایسا زہر ہے جس سے چند خوش نصیب ہی محفوظ ہوں گے۔
روزانہ لاکھوں لوگ لاکھوں کروڑوں روپے کا یہ مضر صحت مشروب پیتے ہیں اور اپنی صحت میں مزید بگاڑ پیدا کر رہے ہیں ۔ہم بھی کمال دوہرے معیار کے لوگ ہیں کہ پہلے بیماری خریدتے ہیں اور پھر اس سے چھٹکارا حاصل کرنے کے لیے پیسہ خرچ کرتے ہیں ۔اور یہ ایک تلخ حقیقت بھی ہے کہ روزانہ ہزاروں لوگ اس کی بھینٹ بھی چڑھتے ہیں۔ ہم باوثوق طور پر یہ کہتے ہیں اگر دنیا سے صرف چائے نکال دی جائیں تو انسان 50%سے زیادہ امراض کے خطرات سے محفوظ ہوجائے ۔

چائے ایک عام استعمال کی چیز ہے ۔یہ طبی خواص کے لحاظ سے گرم اور خشک مزاج کی حامل ہے ۔یہ پیاس کو بجھاتی اور پیشاب آور ہے ۔اس میں ایک زہریلا اور نشیلا مادہ کیفین پایا جاتا ہے،جو جدید طبی وسائنسی تحقیقات کی رو سے بلڈ پریشر میں نہ صرف اضافہ کرتا ہے بلکہ بلڈ پریشر کے مرض کا باعث بھی بنتا ہے ۔کیلشیم کو جسم کا حصہ بننے سے روکتا ہے ۔RNAاورDNAکی پیدائش میں رکاوٹ پیدا کرتا ہے ،

ذیابیطس ،کینسر اور گردوں کے امراض کا سبب بھی چائے بنتی ہے۔
چائے کے زیادہ استعمال سے جسم میں تیزابیت وافر مقدار میں پیدا ہونے لگتی ہے ،جو بعدازاں تیزابی مادوں کا ذریعہ بن کر جسم میں یورک ایسڈ کی افزائش کرنے لگتی ہے ۔یوں چائے کے عادی افراد نقرص ،

گنٹھیا اور جوڑوں کے درد جیسے موذی امراض میں گرفتار ہو جاتے ہیں ۔چائے اپنی پیشاب آور خصوصیات کی وجہ سے جسم سے پانی کو خارج کرتی ہے ،جس کے نتیجے میں انسانی جسم میں پانی کی مطلوبہ مقدارمیں کمی واقع ہونے لگتی ہے ،جس سے خون گاڑھے پن کی طرف مائل ہو جاتا ہے ۔خون گاڑھا ہونے کی وجہ سے خون کی نالیاں تنگ ہو جاتی ہیں اور یوں دورانِ خون کے عوارض سامنے آنے لگتے ہیں ۔گردوں کی کارکردگی متاثر ہونے لگتی ہے ۔خون میں کولیسٹرول کی مقدار بڑھنے لگتی ہے ۔نتیجتاً ہارٹ اٹیک ،انجائنا ،گردوں کا فیل ہونا بلڈ پریشر اور بلڈ شوگر کے خطرات ظاہر ہونے لگتے ہیں۔

چائے میں شامل کیفین کی زیادتی ہڈیوں کی کمزوری کا باعث بنتی ہے اور بچوں میں چائے کا زیادہ استعمال ان کی جسمانی نشوونما کو متاثر کرتا ہے ۔جس سے قد کا چھوٹا رہ جانا معمولی سی بات ہے ۔چائے کے مزاج میں شامل گرمی اور خشکی سے اعصاب کمزور ہونے لگتے ہیں۔چائے نوش آہستہ آہستہ دائمی قبض میں مبتلا ہو کر دوسرے کئی امراض معدہ،امراض جگر اور گردوں کی بیماریوں میں گرفتار ہو جاتے ہیں۔ علاوہ ازیں بکثرت چائے پینے کے عادی افراد بے خوابی کا شکار ہو جاتے ہیں، طبیعت میں اضطرابی کیفیت رہنے لگتی ہے ،ڈپریشن اور انزائٹی سے جینا اجیرن ہو جاتا ہے ۔موجودہ دور کی سب سے خطر ناک بیماریاں ڈپریشن ،انزائٹی اور انجانا خوف ہیں ،جو ہر چوتھے فرد کو لاحق ہیں ۔مذکورہ امراض کی سب سے بڑی وجہ چائے نوشی کی کثرت ہے ۔

چائے نوشی کی بری عادت سے بچنے کے لیے درج ذیل طریقے اپنائیں۔ چائے کا بکثرت استعمال کرنے والے افراد کو چاہیے کہ روزانہ چائے پینے کے معمول میں تبدیلی لائیں اور چائے کی مقدار میں بتدریج کمی کرتے جائیں۔ قارئین کرام نوٹ فرمالیں کہ 24گھنٹوں میں ایک آدھا چائے کا کپ پینے میں قباحت نہیں ہے،کیونکہ انسانی جسم کو کیفین کی مخصوص مقدار کی لازمی ضرورت ہوتی ہے جو کہ چائے کے ایک کپ سے حاصل کی جاسکتی ہے۔
چائے کی عادت سے چھٹکارا حاصل کرتے وقت ضروری ہے کہ اپنی خوراک کو متوازن اور متناسب کیا جائے ،تاکہ کیفین کے مابعد اثرات سے بچا جا سکے۔غذاؤں اور مغزیات،روغنیات اور مقویات کا استعمال معمول سے زیادہ کیا جائے۔موسمی پھلوں اور خالص دودھ کو روزمرہ غذا کا لازمی حصہ بنائیں۔

Today’s human being is on the rise of evolutionary stages, it has gained numerous incentives from scientific and machine inventions as well as with many problems.
In fact, human beings have many measurements of muscles, but in spiritual and physically many veins have been inflicted on them. They are being trapped in the form of more deadly diseases that are controlled by nausea.
These deadly diseases are the result of their own experiences and discoveries

.
Tea is a leading discovery of the nineteenth century and initially used it as a medicine, but later, the mind-minded people made it difficult for people who introduced it as a Consumer Project. Effective advertising campaign and electronic media campaign Has made tea essential for everyone in the house.
This drink is a cause of disorder whose hands today are so disturbed. The poisonous growth period is the poison that will save some happy ones. Are you familiar with the Tea losses?

Millions of people drink millions of millions of these nutritious health drinks and are causing more disturbance in their health. We are also perfected people of the world who buy first disease and then spend money to get rid of it. .
And it is also a tremendous fact that thousands of people also spread their brains daily. We, in fact, say that if the tea is removed only from the world, then humans get protected from the risk of disease over 50%.

Tea is a common ingredient .It is a hot and dry temperament in terms of medical condition .It is thirsty and thirsty .These are found to be a toxic and nutritious substance caffeine, Not only increases blood pressure but also causes blood pressure.
Prevent calcium from being part of the body. Disrupts the formation of RNA and DNA,
Diabetes, cancer and kidney diseases also cause tea.
The use of tea in excess increases the amount of acidity in the body, which causes the acidic acid to be absorbed into the body by means of acidic sources .Children, tea addicts,

Genta and joint pain are found in pediatric diseases.
Tea eliminates the water from the body due to its urine characteristics, resulting in reducing the desired amount of water in the human body, which causes the blood to flow towards the pit. Blood stains tighten and blood disorders appear to occur during the period. The surrounding performance starts to affect. The quantity of cholesterol increases in the blood.

As a result, harticake, angina, kidney stones, appear to appear in blood pressure and blood sugar risks.
Abuse of caffeine in tea causes the weakening of bones and more use of tea in children affects their physical growth. It is a minor thing to keep small from the height of the tissue .Shine and temperament Nerves begin to weaken. Are you familiar with the Tea losses?

Tea nose are slowly present in chronic hemorrhoids, and many other diseases, diabetes and kidney diseases occur. Additionally, consumers of unhealthy tea suffer from depression, there is an inferiority in nature, living with depression and privatization becomes the most vulnerable. The most dangerous diseases of the remote era are depression, ingredients and anguish, Those who are entitled to each fourth person.

The biggest cause of diseases mentioned is the abundance of tea.
To avoid bad habits of tea, apply the following methods: People using tea tea should change daily routine and reduce the quantity of tea. Readers note that in a matter of four hours a half-cup of tea does not mean drinking in the 24 hours, because the human body is essential for the specific amount of caffeine that can be obtained from one cup of tea. Are you familiar with the Tea losses?

When you get rid of the habit of tea, it should be necessary to balance your diet, to avoid the effects of caffeine. Food and nutrients, medicines and medicines should be used more than usual. Mint Fruit and Pure Milk Make the essential part of daily diet.source.

Tags

Related Articles

15 Comments

  1. I wanted to thank you again for your amazing blog you have made here.

    It really is full of ideas for those who are seriously interested in this specific subject, especially this
    very post. You’re really all absolutely sweet as well as
    thoughtful of others and reading your blog posts is a good
    delight to me. And what generous treat! Tom and I really have
    excitement making use of your recommendations in what we must do
    in a few days. Our record is a mile long and simply
    put tips might be put to good use.

  2. Wow that was unusual. I just wrote an really long comment but after I clicked submit my comment didn’t show up.
    Grrrr… well I’m not writing all that over again. Anyway, just wanted to say superb blog!

  3. Hi there! Do you know if they make any plugins to help with Search Engine Optimization? I’m trying to get my blog to
    rank for some targeted keywords but I’m not seeing
    very good success. If you know of any please share.
    Kudos!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
error

Enjoy this blog? Please spread the word :)

Follow by Email
Facebook
Facebook
Twitter
Close
Close